کوہلی کوٹیم میں شامل کرنے پر میری ملازمت گئی

کپتان دھونی ،کوچ کرسٹن اور سرینواسن 2008 میں بدری ناتھ کے حامی تھے،دلیپ وینگسکر کا انکشاف

نئی دہلی۔4 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق چیف سلیکٹر دلیپ وینگسرکر نے انکشاف کیا ہے کہ ویراٹ کوہلی کو ٹیم میں شامل کرنے کی وجہ سے انہیں اپنی ملازمت سے ہاتھ دھونا پڑا تھا کیونکہ جہاں وہ کوہلی کو ٹیم میں شامل کرنے کے خواہاں تھے وہیں اس وقت کی ٹیم کے کپتان مہندرسنگھ دھونی اور ٹیم کے کوچ گیری کرسٹن کوہلی کو ٹیم میں شامل کرنے کے حق میں نہیں تھے۔ مہندر سنگھ دھونی اور ٹیم کے موجودہ کپتان وراٹ کوہلی پر دلیپ نے یہ بڑا انکشاف کیا ہے۔ کرک ٹریکر کی رپورٹ کے مطابق دلیپ وینگسرکر نے ایک انٹرویو میںکہا ہے کہ ایک وقت تھا جب دھونی نہیں چاہتے تھے کہ ویراٹ کوہلی ہندوستان کے لئے کرکٹ کھیلیں۔63 سالہ سابق سلیکٹر نے کہا کہ یہ سال 2008 کی بات ہے جب سلیکٹرس انڈر 23 ٹیم کے کھلاڑیوں کو منتخب کرنے پر رضا مند ہوئے تھے۔ تبھی ہندوستان نے انڈر19 ورلڈ کپ جیتا تھا، جس کے بعد سلیکٹروں نے شاندارکارکردگی کرنے والے ٹیم کے کپتان کوہلی کو منتخب کرلیا۔اس ضمن میں مزید تفصیلات بتاتے ہوئے دلیپ نے کہا کہ تب ہمیں سری لنکا کا دورہ کرنا تھا اور وہ کوہلی کو ٹیم کا حصہ بنانا چاہتے تھے لیکن دھونی اور کرسٹن نے اس فیصلے کی مخالفت کی تھی ۔ دھونی اور کرسٹن کوہلی کو شامل کرنے کے اسلئے مخالف تھے کیونکہ وہ کوہلی کی صلاحیتوں سے واقف نہیں تھے جبکہ دلیپ نے کوہلی کا کھیل دیکھا تھا ۔سابق سلیکٹر نے کہا وہ کوہلی کی صلاحیتوں سے واقف تھے اور وہ کوہلی کی تکنیک سے واقف تھے لہذا وہ کوہلی کو ٹیم میں شامل کرنے کے خواہاں تھے۔ دلیپ نے کہا کہ تب کوچ گیری کرسٹن اور کپتان مہندر سنگھ دھونی نے کہا تھا کہ ہم نے ویراٹ کوہلی کو کھیلتے نہیں دیکھا ہے، اس لئے انہیں نہیں کھلا سکتے۔ ہم پرانی ٹیم کے ساتھ اتریں گے۔ ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے سابق بیٹسمین دلیپ وینگسرکر نے ساتھ ہی کہا کہ میں نے دھونی اورگیری کرسٹن سے کہا کہ آپ نے اسے کھیلتے نہیں دیکھا ہے لیکن میں نے دیکھا ہے اور ہمیں اس لڑکے کو لینا چاہئے۔ دلیپ وینگسرکر نے کہا، مجھے لگتا تھا کہ کوہلی کو سری لنکا لے جانے کیلئے یہ صحیح وقت ہے لیکن دھونی اورگیری کرسٹن نے میرے فیصلے پر اتفاق نہیں ظاہرکیا کیونکہ ان دونوں نے کوہلی کو کھیلتے نہیں دیکھا تھا۔ دلیپ وینگسر کے مزید کہا کہ مہندر سنگھ دھونی اور این شری نواسن نے تب ایس بدری ناتھ کی حمایت کی تھی، جنہوں نے گھریلو کرکٹ میں بہترین کھیل دکھایا تھا۔ دلیپ وینگسرکر نے ساتھ ہی کہا کہ بی سی سی آئی کے سابق صدر این شری نواسن تب کوہلی کو ٹیم میں شامل کئے جانے کے میرے فیصلے سے خوش نہیں تھے کیونکہ ان کا ماننا تھا کہ بدری ناتھ کو موقع دیا جانا چاہئے تھا۔

TheLogicalNews

Disclaimer: This story is auto-aggregated by a computer program and has not been created or edited by TheLogicalNews. Publisher: The Siaset Daily Urdu

(Visited 16 times, 1 visits today)
The Logical News

FREE
VIEW
canlı bahis